کسی بھی دھاندلی کا سوال ہی پیدا نہیں ہو تا ،ن لیگی رہنما عطا تارڑ کا دعویٰ

اسلام آبا د(روشن پاکستان نیوز)مسلم لیگ ن کے رہنما عطاء تارڑ نے کہا ہے کہ سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ کوئی دھاندلی ہوئی ہے یا امن خراب ہوا ہے، دھاندلی کا جو تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے وہ غلط ہے۔
لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عطاء تارڑ نے کہا کہ حکومت سازی کے معاملات چل رہے ہیں، قومی و صوبائی اسمبلی کے آزاد ارکان شانہ بشانہ مسلم لیگ ن میں شامل ہو رہے ہیں۔ پیدا کیا گیا تھا
عطا تارڑ کہتے ہیں کہ آپ نے ابتدائی نتائج پر حتمی رائے قائم کرنے کی کوشش کی، بہت سی قیاس آرائیاں کی گئیں کہ نواز شریف نے تقریر نہیں کی، نتائج آنے پر نواز شریف نے تقریر کرنی تھی۔
انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کو جو پذیرائی ملی ہے، ہم واحد بڑی جماعت ہیں، آج پنجاب میں 150 کا ہندسہ عبور کریں گے، دو آزاد ایم این ایز ہمارے ساتھ آئے ہیں، ہم دیگر جماعتوں سے مشاورت کر رہے ہیں۔ .
رہنما مسلم لیگ ن کا کہنا ہے کہ جب بھی وزارت عظمیٰ کے امیدوار کا اعلان ہوگا مشاورت کے نتیجے میں ہوگا، اتحادیوں سے ہماری مزید مشاورت جاری ہے، پنجاب میں ہماری تعداد 140 تھی، آج 6 شامل ہوئے۔ 4 مزید کر رہے ہیں۔
ان کا کہنا ہے کہ وفاق میں پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم سے ہماری مشاورت جاری ہے، امیدوار کا اعلان مشترکہ اور متفقہ طور پر کیا جائے گا، پنجاب میں مسلم لیگ ن کی حکومت قائم ہونے جارہی ہے۔
عطا تارڑ نے کہا کہ نواز شریف کی تقریر اس وقت کی تھی جب نوے فیصد نتائج آچکے تھے، جاوید لطیف، سعد رفیق، رانا ثناء اللہ اور ن لیگ کے شیخ روحیل اصغر ہار گئے تھے۔
ان کا کہنا ہے کہ جہاں بھی ہارے اسے خوش دلی سے قبول کیا، ہارنے والے دھاندلی کے جھوٹے الزامات لگا رہے ہیں، ہم وفاق اور پنجاب میں واحد بڑی جماعت بن کر ابھرے ہیں، خیبرپختونخوا میں پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدواروں کا صفایا کیا۔ مینڈیٹ دیا گیا ہے، کے پی کے میں آپ کا امیدوار جیت گیا ہے تو کوئی دھاندلی نہیں ہوئی۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ ابتدائی نتائج کی بنیاد پر آپ نے حتمی رائے قائم کرنے کی کوشش کی، شفاف، غیر جانبدارانہ اور منصفانہ انتخابات ہوئے، ہم نواز شریف کی قیادت میں ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنا چاہتے ہیں۔