خدشہ ہے ن لیگ اور ان کے کارندے خون خرابے کی سازش کریں گے، پلوشہ خان

اسلام آباد(روشن پاکستان نیوز)پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما پلوشہ خان نے پاکستان مسلم لیگ (ن) پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ خدشہ ہے (ن) لیگ اور ان کے کارندے خون خرابے کی سازش کریں گے، لاہور میں بلاول بھٹو زرداری کے ایک حلقے نے ان کی نیندیں حرام کردی ہیں۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کی رہنما پلوشہ خان نے کہا کہ 9 فروری کا سورج (ن) لیگ کے لیے شکست کا ماتم لے کر آئےگا۔ انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما عطا تارڑ پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ (ن) لیگ کے اپنے لوگ گھروں میں جاکر کہتے ہیں عطاتارڑ جعلی امیدوار ہے، الیکشن کمیشن عطا تارڑ کی دھمکیوں کا نوٹس لے، عطاتارڑ کی شکست دیوار پر لکھی ہے۔

پلوشہ خان نے کہا کہ انہیں خدشہ ہے ن لیگ اور ان کے کارندے خون خرابے کی سازش کریں گے، ’ہمیں خدشہ ہے کہ ماڈل ٹاؤن جیسا سانحہ نہ ہو، (ن) لیگ جانتی ہے وہ عوامی غیض و غضب کا شکار ہونے جارہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ بلاول بھٹوزرداری کے لاہور این اے 127 سے خوف زدہ ہے، لاہور بلاول بھٹو کے لئے نہیں مریم اورنگزیب کے لئے نیا ہوسکتا ہے، بلاول کے ایک حلقے نے (ن) لیگ کی نیندیں حرام کردی ہیں۔

رہنما پیپلزپارٹی نے مزید کہا کہ آپ کے بڑے بریف کیس بھر کر کوئٹہ لے جاتے تھے،کیا اس میں کجھور کی گھٹلیاں تھیں،کیا وجہ ہے پورے پنجاب کو چھوڑ کر مسلم لیگ ایک حلقے پر بیان بازی کر رہی ہے،یہ اقتدار کی خاطر تعصب کے شعلے بھڑکانہ چاہ رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ نواز شریف اگر لاڑکانہ سے الیکشن پڑنا چاہیں تو خوش آمدید کہیں گے ، لاہور میں ایک حلقہ کی وجہ سے ن لیگ بوکھلا گئی ہے، کیا وجوہات ہیں ن لیگ نے جلسے منسوخ کردیے ہیں، 16 ماہ ن لیگ اقتدار میں رہی ہے عوام کو ریلیف نہیں دے سکی، پاکستان کسی جاگیر نہیں 8 فروری کو بیلٹ پیپرز کے زریعے سے فیصلہ ہوگا۔