طویل عرصہ سے چپ سادھے صدرعلوی کو بھی ملکی بحران کی فکر کھانے لگی

اسلام آباد(روشن پاکستان نیوز)صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے انتخابی نتائج میں تاخیر پر الیکٹرانک ووٹنگ مشین کی کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری طویل جود جہد کو یاد رکھیں۔ آج ’’ای وی ایم‘‘ ہوتی تو میرا پیارا پاکستان اس بحران سے بچ جاتا۔

سوشل میڈیا پر جاری اپنے بیان میں انہوں نے لکھا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں کاغذی بیلٹ تھے جنہیں ہاتھ سے گنا جا سکتا تھا (جیسا کہ آج کل کیا جا رہا ہے) لیکن اس میں ایک سادہ الیکٹرانک کیلکولیٹر/کاؤنٹر بھی تھا جو ہر ووٹ ڈالنے کی لیے دبائے جانے والے بٹن کو ساتھ ساتھ گن سکتا تھا۔

عارف علوی نے دعویٰ کرتے ہوئے مزید لکھا کہ ہر امیدوار کا رزلٹ پول ختم ہونے کے 5 منٹ کے اندر دستیاب ہوتا اور پرنٹ بھی ہو جاتا۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ ہماری یہ تمام جدوجہد، جس کے لیے ایوان صدر میں 50 سے زائد میٹنگ ہوئیں، ناکام کی گئی۔ اگر آج ای وی ایم ہوتی تو میرا یہ پیارا پاکستان اس بحران سے بچ جاتا۔