بدھ,  19 جون 2024ء
پاکستان اور ترکیہ’دو دل، ایک جان‘ کی مانند ہیں۔سفیر ڈاکٹر یوسف جنید

جنوبی ترکیہ میں 2023 کے زلزلے میں ضائع ہونے والی قیمتی جانوں کی یاد میں پاکستانی سفارت خانے میں درخت لگائے گئے

انقرہ م(روشن پاکستا ن نیوز) انقرہ میں پاکستانی سفارتخانے میں ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں جنوبی ترکیہ میں گزشتہ سال آنے والے تباہ کن زلزلے کے بعد ترک قوم کی ہمت اور استقامت کو یاد کیا گیا۔ ترک پارلیمنٹ کی چیئرپرسن ہیومن رائٹس انویسٹی گیشن کمیشن، رکن پارلیمنٹ محترمہ دیر یانک اور ترکیہ میں پاکستان کے سفیر ڈاکٹر یوسف جنید نے ڈپٹی گورنر انقرہ مسٹر بیکیر یلماز، نائب صدر AFAD جناب حمزہ تادیلن اور میڈیا کے نمائندوں کی موجودگی میں پودے لگائے۔ تھنک ٹینکس اور سول سوسائٹی۔ زلزلہ میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر ایک لمحہ کی خاموشی اختیار کی گئی جس کے بعد فاتحہ خوانی کی گئی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سفیر ڈاکٹر یوسف جنید نے زلزلے کے نتیجے میں 50 ہزار سے زائد جانوں کے ضیاع اور املاک کے ہونے والے تباہ کن نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ زلزلے نے بڑے پیمانے پر تباہی کے دوران ترکیہ کے معاشرے کی بھائی چارے کی خوبیوں کو اجاگر کیا،
صدر رجب طیب اردگان کی قیادت میں ترک حکومت کی اس طرح کے زبردست نقصان کو بہترین طریقے سے سنبھالنے کی صلاحیت بھی ابھر کر سامنے آئی ۔

پاکستان ترک بھائی چارے اور دوستی کی گہرائیوں پر روشنی ڈالتے ہوئے سفیر نے کہا کہ دونوں ممالک ’دو دل، ایک جان‘ کی مانند ہیں۔ دونوں ممالک ہر حال میں ایک دوسرے کا ساتھ دینے کی شاندار روایت رکھتے ہیں۔ آپ کادکھ ،ہمارا دکھ کے جذبے کے تحت، یہ پاکستان کی ذمہ داری تھی کہ وہ زلزلے سے متعلق امدادی سرگرمیوں میں اپنا حصہ ڈالے۔

نائب صدر AFAD حمزہ تاڈلین نے پاکستان کی مثالی یکجہتی اور زلزلے سے متعلق امدادی امداد کے لیے فوری ردعمل کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے روشنی ڈالی کہ پاکستانی ریسکیو ٹیمیں پہلی بین الاقوامی ٹیموں میں شامل تھیں جو زلزلے سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے شہر اڈیاماں پہنچیں جہاں انہوں نے بہت سی قیمتی جانیں بچائیں۔ انہوں نے کہا کہ امدادی سامان خاص طور پر موسم سرما میں خیموں کو ہوائی، زمینی اور سمندری راستوں سے بھیجا گیا تاکہ متاثرہ علاقوں میں فوری ترسیل کو یقینی بنایا جا سکے، جس سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ پاکستانی بھائیوں کے دل ترک عوام کے دلوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔

مزید خبریں

FOLLOW US

Copyright © 2024 Roshan Pakistan News