جمعه,  17 مئی 2024ء
آپریشن سرمچار ایران نہیں بلکہ دہشتگردوں کیخلاف تھا، ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد(روشن پاکستان نیوز) ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ایران کیساتھ برادرانہ تعلقات ہیں ،، پاکستانی عوام ایرانی عوام کیساتھ بہت عزت اور محبت رکھتے ہیں، آپریشن سرمچار ایران پر نہیں کیا گیا ایران میں موجود بی ایل اے اور بی ایل ایف پر کیا گیا ہے۔دفتر خارجہ میں بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا کہ ایران برادر ملک ہے اور ایرانی عوام کے لیے عزت و احترام کا جذبہ ہے، ہماری فوج نے انٹیلی جنس بنیادوں پر آپریشن کیا جس میں دہشت گرد مارے گئے، پاکستان نے ثبوت کے ساتھ دہشت گردوں کی موجودگی کے ڈوزئیز شئیر کئے۔ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا کہ انتہائی پیچیدہ آپریشن کا کامیاب انعقاد بھی پاکستان کی مسلح افواج کی پیشہ ورانہ مہارت کا منہ بولتا ثبوت ہے، پاکستان میں اپنا تحفظ خود کرنے کی صلاحیت ہے، پاکستان اپنے عوام کے تحفظ اور سلامتی کے لیے تمام ضروری اقدامات کرتا رہے گا۔ترجمان نے کہا کہ گزشتہ کئی ماہ سے پاکستان بی ایل اے اور بی ایل ایف کے دہشت گردوں کی ایران میں موجودگی کے حوالے سے ایران سے رابطے میں تھا، پاکستان ایران کو قریبی دوست مانتا ہے اور ان کی دل سے عزت کرتا ہے، ایران ایک برادر ملک ہے اور پاکستانی عوام ایرانی عوام کے لیے بہت عزت اور محبت رکھتے ہیں، آپریشن سرمچار ایران پر نہیں کیا گیا ایران میں موجود بی ایل اے اور بی ایل ایف پر کیا گیا ہے تاہم ایران نے یہاں حملے سے پہلے پاکستان سے کسی قسم کی کوئی تفصیل شئیر نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان تمام دھمکیوں کے خلاف اپنا دفاع خود کرسکتا ہے، دو دن پہلے جو بھی ہوا پاکستان کے لیے بہت ہی حیران کن تھا، سرمچار آپریشن انٹیلی جینس بیسڈ آپریشن تھا۔

مزید خبریں

FOLLOW US

Copyright © 2024 Roshan Pakistan News