جمعه,  19 اپریل 2024ء
ڈائٹ مشروبات دل کیلئے خطرناک ؟ نئی تحقیق میں انکشافات ،ماہر ین نے خبردار کر دیا

اسلام آباد (روشن پاکستان نیوز)ایک نئی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہفتے میں دو یا اس سے زیادہ لیٹر ڈائیٹ ڈرنکس پینے سے دل کی دھڑکن بے ترتیب ہونے کا خطرہ 20 فیصد تک بڑھ جاتا ہے۔

طب میں، اس حالت کو ایٹریل فبریلیشن کہتے ہیں۔ دوسری جانب تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ اتنی ہی مقدار میں تازہ، بغیر میٹھا جوس پینا ایٹریل فائبریلیشن کے خطرے کو آٹھ فیصد تک کم کر سکتا ہے۔

محققین نے کہا کہ ڈائیٹ ڈرنکس کے سب سے زیادہ صارفین خواتین، کم عمر افراد، زیادہ وزن والے افراد اور ٹائپ 2 ذیابیطس کے شکار افراد تھے۔

دنیا بھر میں تقریباً 40 ملین لوگ ایٹریل فیبریلیشن کا شکار ہیں، یہ ایک ایسی حالت ہے جس کی وجہ سے دل کی دھڑکن تیزی سے ہوتی ہے۔ یہ دورے کچھ مریضوں میں مختصر، قسط وار مدت کے لیے ہو سکتے ہیں یا دوسروں میں مستقل ہو سکتے ہیں۔

نئی تحقیق میں تقریباً 202,000 افراد کے اعداد و شمار پر نظر ڈالی گئی، شرکاء کی عمریں 37 سے 73 سال کے درمیان تھیں، اس کے بعد اوسطاً 10 سال اور نصف سے زیادہ خواتین تھیں۔

ٹیم نے پایا کہ جو لوگ ہر ہفتے دو یا اس سے زیادہ لیٹر ڈائیٹ ڈرنکس پیتے ہیں ان میں ایٹریل فبریلیشن ہونے کا امکان 20 فیصد زیادہ ہوتا ہے۔

مزید خبریں

FOLLOW US

Copyright © 2024 Roshan Pakistan News