هفته,  13 جولائی 2024ء
سکول بس سڑک کے کنارے گہری کھائی میں جا گری ، ایک بچہ جاں بحق 41 زخمی

 

 

اسالہ (روشن پاکستان نیوز)سوات کی تحصیل خوازہ خیلہ کے علاقے اسالہ کوٹنائی میں اسکول بس سڑک کے کنارے گہری کھائی میں جاگری جس کے نتیجے میں ایک طالب علم جاں بحق اور 41 زخمی ہوگئے۔ ریسکیو 1122 کے مطابق سکول بس جس میں 42 کے قریب طلباء سوار تھے۔ خوازہ خیلہ کے ایک نجی سکول اباسین سے بچوں کو سکول کے بعد گھر لے جا رہا تھا۔ ریسکیو 1122 کی ترجمان شفیقہ گل نے بتایا کہ بس اسالہ کے علاقے میں ایک تنگ پل پر پہنچی تو بے قابو ہو گئی۔ کر کھائی میں گرنے سے عبداللہ نامی طالب علم موقع پر ہی جاں بحق جبکہ دیگر بچے زخمی ہوگئے۔

 

انہوں نے بتایا کہ ریسکیو 1122 کی ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر زخمی طلباء کو خوازہ خیلہ اسپتال منتقل کیا، 6 زخمی طلباء کی حالت تشویشناک ہے، جس کے باعث انہیں علاج کے لیے سیدو شریف ٹیچنگ اسپتال منتقل کردیا گیا۔ مقامی عینی شاہدین۔ ڈرائیور کے مطابق بس بے قابو ہو کر کھائی میں جاگری۔ خوازہ خیلہ کے رہائشی حیدر علی نے ڈان کو بتایا کہ یہ وہی ڈرائیور تھا جو لالکو کے علاقے گبون جبہ میں طلباء کو لے جانے والی اسکول بس چلا رہا تھا اور اس وقت بھی۔ بس الٹ گئی جس کے نتیجے میں 4 طلبہ جاں بحق اور 32 زخمی ہوگئے، اسے بھی پولیس نے گرفتار کرلیا۔

 

ستم ظریفی یہ ہے کہ ڈرائیور کو اباسین سکول نے رکھا اور ایک بار پھر بس بے قابو ہو گئی۔ مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ بس بھی بہت پرانی تھی اور اس سڑک کے لیے موزوں نہیں تھی۔ ایک سماجی کارکن وقاص علی نے ڈان کو بتایا کہ نومبر 2021 میں اسی ماڈل کی ایک پرانی بس اسی ڈرائیور کے ساتھ الٹ گئی، جس سے 4 طالب علم ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے۔ سڑکیں اور پل بہت تنگ ہیں جس کی وجہ سے کئی حادثات بھی ہوچکے ہیں، انہوں نے بارہا حکام سے سڑک کو چوڑا کرنے کا کہا لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ پولیس کو اس کو سنجیدگی سے لینا چاہیے اور بچوں کی جانوں سے کھیلنے پر ڈرائیور اور سکول کے مالک کے خلاف کارروائی کی جائے۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر (ڈی پی او) سوات ڈاکٹر زاہد اللہ نے کہا کہ واقعے کی فوری انکوائری کی گئی ہے اور خلاف ورزی کرنے والوں بشمول اسکول انتظامیہ اور ڈرائیور کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ سخت کارروائی کی جائے گی۔

مزید خبریں

FOLLOW US

Copyright © 2024 Roshan Pakistan News