اتوار,  23 جون 2024ء
190ملین پاؤنڈز ریفرنس؛ بشریٰ بی بی غصے میں آ گئیں، جج پر عدم اعتماد کااظہار، دیکھیں خبر

 

اسلام آباد (روشن پاکستان نیوز )اڈیالہ جیل میں 190 ملین پاؤنڈز ریفرنس کی سماعت کے دوران بشریٰ بی بی نے احتساب عدالت کے جج پر عدم اعتماد کا اظہار کیا تاہم طویل مشاورت کے بعد وکلا اور بانی پی ٹی آئی نے عدالت کو عدم اعتماد واپس لینے سے آگاہ کیا، بانی پی ٹی آئی کے خلاف ریفرنس دائر کیا گیا۔ . 190 ملین پاؤنڈز کے ریفرنس کی سماعت 22 مئی تک ملتوی کر دی گئی۔

نجی ٹی وی کے مطابق بشریٰ بی بی غصے میں کمرہ عدالت میں داخل ہوئیں، پی ٹی آئی بانی کے پاس جانے کی بجائے بشریٰ بی بی الگ بیٹھی رہیں۔ عدالت میں داخل ہونے کے کچھ دیر بعد بشریٰ بی بی نے بھی غصے میں روسٹرم پر دھاوا بول دیا۔

بشریٰ بی بی نے کہا کہ انہیں پہلے کے مقدمات کے ججز پر بھی اعتماد نہیں، وہ اس عدالت پر بھی عدم اعتماد کر رہی ہیں۔ بشریٰ بی بی نے جج سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ 15 مئی کو اڈیالہ جیل میں سماعت تھی، کسی نے نہیں بتایا، عدالت نے کہا کہ 15 مئی کی سماعت ملتوی کر دی گئی۔ بشری بی بی نے کہا کہ میں اس کیس میں قید نہیں ہوں، ناانصافی کی وجہ سے جیل میں ہوں۔

اسی دوران پی ٹی آئی کے بانی اپنی جگہ سے اٹھے اور بشریٰ بی بی کے ساتھ روسٹرم پر کھڑے ہوگئے۔ ملاقات بھی نہیں ہوئی، بشریٰ بی بی نے الگ کمرے کا بندوبست کرنے کے بعد اپنی بیٹیوں سے الگ ملاقات کی۔ کبھی بہنوں کے پاس جانا، بشریٰ بی بی اور پی ٹی آئی کی بانی آپس میں پانچ چھ بار باتیں کرتے۔

وکلا اور پی ٹی آئی کے بانی نے بشریٰ بی بی کو منانے کے لیے عدالت سے تین بار وقت مانگا، عدالت نے وکلا اور پی ٹی آئی کے بانی کی درخواست پر تین بار سماعت ملتوی کردی، طویل مشاورت کے بعد وکلا اور بانی پی ٹی آئی اتفاق کیا عدم اعتماد واپس لینے سے متعلق عدالت کو آگاہ کرتے ہوئے وکلا نے عدالت میں درخواست جمع کرائی کہ 15 روز بعد سماعت کی جائے اور کل عدالتی نوٹس پر سماعت کی جائے۔

مزید خبریں

FOLLOW US

Copyright © 2024 Roshan Pakistan News