فاطمہ جناح یونیورسٹی راولپنڈی نے وزرات تعلیم کے احکامات ہوا میں اڑا دیے۔

راولپنڈی ( روبینہ مظہر)فاطمہ جناح یونیورسٹی راولپنڈی نے وزرات تعلیم کے احکامات ہوا میں اڑا دیے ۔وزیر تعیلم شفقت محمود نے آن لائن امتحانات لینے کے حوالے سے واضح احکامات جاری کیے تھے ۔ملک بھر میں یونیورسٹیوں میں آن لائن امتحانات کا انتظام کیا جا رہا ہے جبکہ فاطمہ جناح یونیورسٹی کی طالبات تپتی دھوپ میں سراپا احتجاج ہیں ۔
طالبات کا کہنا ہے ہم نے ڈیڑھ سال آن لائن کلاسز لی ہیں اور اب یونیورسٹی انتظامیہ ہمیں کیمپس امتحانات
دینے پر مجبور کر رہی ہے جس سے ہماری آن لائن کی گئی پڑھائی کا شدید نقصان ہو گا دور دراز کے علاقوں سے آئی ہوئی طالبات بھی شدید مشکل سے دوچار ان کے مطابق یونیورسٹی انتظامیہ فیسیں تو مکمل لے رہے ہیں لیکن ان کو ہمارے تعلیمی کیریئر سے کوئی سروکار نہیں۔
احتجاج کرنے والی طالبات نے کیمپس امتحانات لیے جانے کے فیصلے کو ’مذاق‘ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ’کرونا لاک ڈاؤن کے دوران کچھ طالبات کو انٹرنیٹ کی سہولت میسر نہیں تھی ، لیکن اب جب طالبات نے انٹرنیٹ کا انتظام کیا اور کئی شہری علاقوں میں منتقل ہوگئی ہیں تو اب امتحان آن لائن نہیں لیے جارہے۔کورونا وبا اور لاک ڈاؤن کے دوران اکثر تعلیمی اداروں میں تو سرے سے پڑھائی ہی نہیں ہو سکی جبکہ زرائع کے مطابق فاطمہ جناح یونیورسٹی نے تدریسی عمل آن لائن کلاسز کے ذریعے جاری رکھا ہوا تھا۔ان طالبات کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے کلاسز آن لائن لی ہیں اور کورونا وائرس کی وبا کے دوران انہیں آن لائن پڑھایا گیا ہے تو امتحانات بھی آن لائن ہی لیے جائیں۔ کچھ طالبات فیس واپسی کا بھی مطالبہ کر رہی ہیں یونیورسٹی کی جانب سے ابھی تک کوئی خاص لائحہ عمل سامنے نہیں آیا۔واضح رہےان طالبات نے واضح طور پر مطالبہ کیا ہے کہ ”ہم امتحانات دینے کیخلاف نہیں ہیں، ہم صرف کیمپس میں امتحانات کیخلاف ہیں، کیونکہ ہماری تیاری آن لائن امتحانات کے مطابق ہوئی ہے اور اب امتحانات بھی آن لائن ہونے چاہیے۔ براہ کرم ہمارے مستقبل سے کھیلنا بند کریں۔دوران احتجاج بہت سی طالبات نے اپنی ساتھیوں کو بھی آڑے ہاتھوں لیاکہ جو طالبات آن لائن امتحانات کا مطالبہ کر رہی ہیں ان سب نے آن لائن کلاسز سنجیدگی سے نہیں لی ہیں ۔ کووڈ کی وجہ سےملک بھر میں ادارے بند تھے تو طلبا وطالبات آن لائن امتحانات کی مخالفت کر تے رہے لیکن اب ان کا کہنا ہے کہ امتحانات کیمپس کے بجائے آن لائن منعقد کروائے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں