اوورسیز ایمپلائمنٹ پرموٹرز کا شعبہ پاکستان کا سب سے زیادہ ریونیو دینے والا شعبہ ہے۔چوہدری خالد کمبوہ

اسلام آباد(سٹی رپورٹر) آل پاکستان اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز ٹائیگر گروپ کے چیئرمین چوہدری خالد کمبوہ نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمراں خان اور چیف جسٹس آف پاکستان ہمارے زخموں پر مرہم رکھیں اور ہمارے چولہوں کو ٹھنڈا ہونے سے بچائیں۔ گزشتہ دو سال سے کورونا کی لہر کے نتیجے میں فلائٹس بند ہونے سے اوورسیز ایمپلائمنٹ پرموٹرز فاقہ کشی پر مجبور ہو گئے ہیں اور نیٹ شیڈول بند ہونے سے یہ انڈسٹری تباہی کے دہانے پر آ کھڑی ہوئی ہے لہذاٰ فوری طور پر تمام بند فلائٹس کو بحال کیا جائے، جو ویزے ایکسپائر ہو گئے ہیں انکی کی تجدید کیا جائے اور جن لوگ چھٹیوں پر پاکستان آئے تھے اور فلائٹس بند ہونے کے باعث یہاں پھنس گئے اور ان کے ویزے ختم ہو گئے ہیں انہیں ریلیف فراہم کیا جائے، نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں اپنے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے خالد کمبوہ کا کہنا تھا کہ اوورسیز ایمپلائمنٹ پرموٹرز کا شعبہ پاکستان کا سب سے زیادہ ریونیو دینے والا شعبہ ہے مگر بدقسمتی سے حکومتی سرپرستی نہ ہونے اور گذشتہ دو سالوں سے کورونا کے باعث فلائٹس کا نیٹ شیڈول بند ہونے سے یہ انڈسٹری تباہی کے دہانے پر آ کھڑی ہوئی ہے اور پرموٹرز فاقہ کشی پر مجبور ہو گئے ہیں، پرموٹرز کے بچے فیسیں ادا نہ کرنے کی وجہ سے اسکولوں سے نکال دیئے گئے ہیں، دفاتراور ملازمین کے واجبات ادا نہ کرنے پر لیگل نوٹسز کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، جبکہ سی بی آر والے الگ تنگ کر رہے ہیں، انہوں نے وزیراعظم پاکستان عمراں خان اور چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہمارے زخموں پر مرہم رکھیں اور ہمارے چولہوں کو ٹھنڈا ہونے سے بچائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں